یہ تو بتاؤ جاناں

download

یہ تو بتاؤ جاناں

کیا دل میں اب بھی رباب بجتے ہیں؟

افق پر اب بھی شہاب جلتے ہیں؟

جب کبھی میرا نام لیتے ہو؟

 

یہ تو بتاؤ جاناں

کیا روح میں اب بھی کسک سی ہوتی ہے؟

آنکھوں میں اب بھی شفق سی کھلتی ہے ؟

جب کبھی میرا نام لیتے ہو؟

 

یہ تو بتاؤ جاناں

کیا سانسیں اب بھی بہک سی جاتی ہیں؟

قدم اب بھی لڑکھڑاتے ہیں ؟

جب کبھی میرا نام لیتے ہو؟

 

یہ تو بتاؤ جاناں

کیا خواھش اب بھی گنگناتی ہے؟

شرم اب بھی ڈگمگاتی ہے ؟

جب کبھی میرا نام لیتے ہو؟

 

یہ تو بتاؤ جاناں

کیا راتیں اب بھی حزن ہوتی ہیں؟

شامیں اب بھی خراب ہوتی ہیں؟

جب کبھی میرا نام لیتے ہو؟

 

یہ تو بتاؤ جاناں

کیا خواب اب بھی سراب ہوتے ہیں؟

نغمے اب بھی جواب ہوتے ہیں؟

جب کبھی میرا نام لیتے ہو؟

You may also like

Leave a Reply