لکیر کا تیسرا کونا

11

میرے ہمدم میرے جاناں

کیسے بتلاؤں تمھیں؟

کیسے سمجھاؤں تمھیں؟

محبت مان ہوتی ہے

محبت جان ہوتی ہے

مگر جب دو میں بٹ جائے

بس کڑا امتحان ہوتی ہے

نا رکھی جاتی ہے

نا پھینکی جاتی ہے

محبت شہر دل میں بس

اک ویراں مکان ہوتی ہے

 

میرے ہمدم میرے جاناں

کیسے بتلاؤں تمھیں؟

کیسے سمجھاؤں تمھیں؟

محبت زندگی لیکن

محبت بندگی لیکن

جب تقسیم ہوجاے

بھاری بوجھ بن جائے

محبت عذاب ہوتی ہے

محبت عتاب ہوتی ہے

 

میرے ہمدم میرے جاناں

کیسے بتلاؤں تمھیں؟

کیسے سمجھاؤں تمھیں؟

محبت جب بانٹی جاتی ہے

محبت جب تولی جاتی ہے

جتنا سنبھالو اسے

محبت چھوٹ جاتی ہے

جتنا بچا لو اسے

محبت ٹوٹ جاتی ہے

 

میرے ہمدم میرے جاناں

کیسے بتلاؤں تمھیں؟

کیسے سمجھاؤں تمھیں؟

محبت دو نکتوں میں کھنچی

اک سادہ لکیر ہوتی ہے

نا گنجائش ہوتی ہے

نا زیبائش ہوتی ہے

محبت تیسرے نکتے سے

جب اک تکون بن جائے

محبت خوف ہوتی ہے

محبت موت ہوتی ہے

 

میرے ہمدم میرے جاناں

کیسے بتلاؤں تمھیں؟

کیسے سمجھاؤں تمھیں؟

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s