ڈر سب مینڈکوں کو لگتا ہے

95724120-56a2bcee5f9b58b7d0cdf874

ڈر سب مینڈکوں کو لگتا ہے

ڈر سب مینڈکوں کو لگتا ہے

کنویں کا مینڈک بھی ڈرتا ہے

باہر دنیا کا مینڈک بھی ڈرتا ہے

 

کنویں کا مینڈک

باہر ٹراتے بولتے کودتے

ہر مینڈک سے ڈرتا ہے

باہر کے مینڈک کی

آزادی سے ڈرتا ہے

سوچ سے ڈرتا ہے

 

کنویں کا مینڈک

باہر دنیا کے مینڈک سے ڈرتا ہے

باہر دنیا کے ہونے سے ڈرتا ہے

باہر کیا ہے؟

اس کے تصور سے وابستہ

موہوم امید سے ڈرتا ہے

 

کنویں کا مینڈک چاہتا ہے

سب مینڈک، کنویں کی بات کریں

اسکی گول اونچی دیواروں

اسکے گہرے پانیوں کی بات کریں

پرانی آوازوں کی گونج

تاریخ کی بازگشت کی بات کریں

 

کنویں کا مینڈک چاہتا ہے

سب مینڈک، روشنی کو بھول کر

صرف اندھیروں کی بات کریں

اندھیروں میں بستے

نامعلوم خوف کی بات کریں

ناگہانی موت کی بات کریں

 

ڈر سب مینڈکوں کو لگتا ہے

ڈر سب مینڈکوں کو لگتا ہے

کنویں کا مینڈک بھی ڈرتا ہے

باہر دنیا کا مینڈک بھی ڈرتا ہے

 

 باہر دنیا کا مینڈک

کنویں کے اندر چیختے چلاتے

ہر مینڈک سے ڈرتا ہے

کنویں کے مینڈک کے

وحشی پن سے ڈرتا ہے

پاگل پن سے ڈرتا ہے

 

 باہر دنیا کا مینڈک

کنویں کے ہر مینڈک سے ڈرتا ہے

کنویں کے ہونے سے ڈرتا ہے

کنویں میں کیا ہے؟

اس کی یاد سے وابستہ

مہیب خوف سے ڈرتا ہے

 

باہر دنیا کا مینڈک چاہتا ہے

سب مینڈک، اور بھی کوئی بات کریں

باہر دنیا کے روشن علم کی

آزادئی اظہار کی بات کریں

پختگئی شعور کی بات کریں

فرسودگیئی روایات کی بات کریں

 

 باہر دنیا کا مینڈک چاہتا ہے

سب مینڈک، پابندئی ظلمات سے باہر

روشن اجالوں کی کوئی بات کریں

اجالوں میں بستے

مہربان خدا کی

شفقت کی کوئی بات کریں

 

ڈر سب مینڈکوں کو لگتا ہے

ڈر سب مینڈکوں کو لگتا ہے

کنویں کا مینڈک بھی ڈرتا ہے

باہر دنیا کا مینڈک بھی ڈرتا ہے

6 thoughts on “ڈر سب مینڈکوں کو لگتا ہے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s