یہاں صرف اندھیرا ہے

d19au07-e16fb5db-75c0-4f73-89ca-6588aa5eb098

یہاں صرف اندھیرا ہے

چاروں سمت اندھیرا ہے

 

یہاں صرف اندھیرا ہے

باہر بھی اور اندر بھی

جہالت کا اندھیرا ہے

حماقت کا بسیرا ہے

مذہب بھی، سیاست بھی

حکومت بھی، عبادت بھی

علم بھی، قانون بھی

فرعون بھی، قارون بھی

سب جہل کی تصویر ہیں

مگر ماہر تقریر ہیں

 

یہاں صرف اندھیرا ہے

چاروں سمت اندھیرا ہے

اندھیرا ہی دستور ہے

اندھیرا ہی شعور ہے

اندھیرے میں سب رہتے ہیں

اندھیرا سب کے اندر ہے

اور اندھیرے سے ہی ڈرتے ہیں

اندھیرے میں رہ کر ہی یہ

اندھی باتیں کرتے ہیں اور

اندھے جھگڑے لڑتے ہیں

 

یہاں صرف اندھیرا ہے

آگے بھی اور پیچھے بھی

اوپر بھی اور نیچے بھی

گھٹا ٹوپ اندھیرا ہے

اندھیرا سب کا ماضی ہے

اور اندھیرا سب کا مقصد ہے

ماضی سے مقصد تک ساری

راہ پر بھی اندھیرا ہے

اندھیری راہ پر اندھے لوگ

اندھی قوم اور اندھے روگ

 

یہاں صرف اندھیرا ہے

اندھیرے میں اندھے لوگ

اندھی راہ پر چلتے ہیں

ٹھوکر بھی یہ کھاتے ہیں

ٹھوکر کھا کر گرتے ہیں

روتے ہیں پھر اٹھتے ہیں

اندھیرے کو کوسنے دے کر

اندھیرے میں چلتے ہیں

اندھیرے پر لعنت کر کے

اندھیرے ہی کو چنتے ہیں

 

یہاں صرف اندھیرا ہے

اندھیرے کی باتیں ہیں

نفرت کی برساتیں ہیں

خون بھی ان کا کالا ہے

اندھیرے جیسا کالا ہے

کالے خون کی اندھی بھینٹیں

دیتے ہیں اور لیتے ہیں

کالا خون بہاتے ہیں

اور نعرہ اوپر والے کا

لگاتے نہیں شرماتے ہیں

 

 

یہاں صرف اندھیرا ہے

چاروں سمت اندھیرا ہے

 اندھیرا ان کا والی ہے

اندھیرا ان کا وارث ہے

اندھیرے میں بسنے والے

اندھیروں پر پلنے والے

اندھیرے کی پناہ میں آ کر

اندھیروں سے ڈرنے والے

یہ سب لوگ اکیلے ہیں

دنیا میں اکیلے ہیں

 

8 thoughts on “یہاں صرف اندھیرا ہے

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s