محبّت، ضرورت اور بلھے شاہ

play-bulha-on-the-life-of-bulleh-shah-at-alhamra

اس کی شادی ہوئے دس پندرہ دن گزر چکے تھے، لیکن میں اب بھی حقیقت سے سمجھوتہ نہیں کر پایا تھا. اور حقیقت یہ تھی کے ہماری محبّت اور وہ بےنام سا رشتہ، جس نے  ہمیں تین سال تک جوڑے رکھا تھا، کب کا ختم ہو چکا تھا. وہ کسی اور کی ہو چکی تھی اور میں، اب بھی اکیلا تھا.شاید اس کا جانا مجھ پر اتنا گراں نا گزرا تھا، جتنا میرا دل، اس کی آخری دنوں کی بے رخی پر ٹوٹا تھا. کبھی اپنے آپ کو سمجھاتا، کبھی اس کی طرف سے وکیل بن جاتا. کبھی غصّہ، کبھی غم، کبھی محبّت ، کبھی نفرت. ایک عجیب عذاب میں جان پھنس گئ تھی

Continue Reading

TIME IS THE CRUELEST OF ALL THINGS

time_flies_by_janussyndicate

It was an early August evening and raining when I rode a train. ‘Nothing special about riding a train in August’, you all must be thinking. Except that I was young and sitting on the front grill of the locomotive, my legs dangling two feet over the track. The rain drops pelting my face were cold but the chill was balanced by the warm glow of the locomotive’s heat spreading across my back. You have to be a lover of both the trains and rains to guess the height of my ecstasy. It was an undreamt dream coming true.

Continue Reading